آسٹریلیا 57 رنز سے فاتح، پاکستان سیریز 4-1 سے ہار گیا

ایڈیلیڈ: آسٹریلیا نے اوپنر ڈیوڈ وارنر اور ٹریوس ہیڈ کی سنچریوں کی بدولت پاکستان پانچویں اور آخری ایک روزہ میچ میں 57 رنز سے شکست دے کر سیریز 4-1 سے جیت لی۔

ایڈیلیڈ میں پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز کے پانچویں میچ میں لگاتار پانچویں مرتبہ آسٹریلیا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔

دونوں ٹیموں نے میچ کیلئے ایک تبدیلی کی جہاں عثمان خواجہ کی جگہ جیمز فالکنر جبکہ عماد وسیم انگلی میں تکلیف کے سب میچ میں حصہ نہیں لے رہے اور ان کی جگہ وہاب ریاض کو میدان میں اتارا گیا۔

ٹریوس ہیڈ نے کیریئر کی پہلی ون ڈے سنچری بنائی— فوٹو: اے ایف پی

ڈیوڈ وارنر کو نئے اوپنر ٹریوس ہیڈ کا ساتھ بھی خوب راس آیا اور دونوں کھلاڑیوں نے عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے تمام پاکستانی باؤلرز کی خوب خبر لی جبکہ اس دوران ڈراپ کیچز کی بدولت پاکستان نے آسٹریلین بلے بازوں کا ساتھ نبھانے کا سلسلہ برقرار رکھا۔

ڈیوڈ وارنر نے لگاتار دوسری سنچری اسکور کی جبکہ ٹریوس ہیڈ نے بھی سنچری مکمل کر لی ہے۔

دونوں کھلاڑیوں نے پہلی پہلی وکٹ کیلئے 284 رنز جوڑے اور کئی ریکارڈ پاش پاش کر دیے۔

پاکستان کو پہلی کامیابی 42ویں اوور میں اس وقت ملی جب وارنر پانچ چھکوں اور 19 چوکوں سے مزین 179 رنز بنانے کے بعد جنید خان کی وکٹ بنے۔

اسٹیون اسمتھ نے پہلی ہی گیند پر چوکا لگا کر خطرناک عزائم ظاہر کیے لیکن دوسری گیند پر ایسی ہی ایک اور کوشش نے ان کی اننگز کا خاتمہ کردیا۔

اس کے بعد امید تھی کہ شاید آسٹریلین ٹیم 400 رنز کا مجموعہ بنانے میں کامیاب ہو جائے لیکن وقفے وقفے سے گرنے والی وکٹوں اور پاکستان کی اختتامی اوورز میں نسبتاً بہتر باؤلنگ کے سبب آسٹریلین ٹیم سات وکٹ کے نقصان پر 269 رنز بنا سکی۔

ٹریوس ہیڈ 128 رنز کی عمدہ اننگز کھیلنے کے بعد آؤٹ ہوئے۔

پاکستان کی جانب سے حسن علی اور جنید خان نے دو دو وکٹیں لیں لیکن حسن نے نو اوورز میں 100 رنز کی پٹائی بھی برداشت کی۔

370 رنز کے ہدف کے تعاقب میں اظہر علی ٹیم کو بیچ منجدھار میں چھوڑ کر پویلین لوٹ گئے۔

شرجیل خان اور بابر اعظم نے ایک بار پھر ذمے داری نبھائی اور 130 رنز کی شراکت قائم کر کے اسکور کو 140 رنز تک پہنچا دیا۔

شرجیل خان 79 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے جبکہ محمد حفیظ نے تین رنز سے زیادہ بنانے کی زحمت گوارا نہ کی۔

بابر اعظم سنچری کی تکمیل پر داد کا جواب دیتے ہوئے— فوٹو: اے ایف پی
بابر اعظم سنچری کی تکمیل پر داد کا جواب دیتے ہوئے ۔فوٹو اے پی پی
 
بڑھتے رن ریٹ کے سبب دباؤ کا شکار ٹیم کو ایک اور دھچکا اس وقت لگا جب شعیب ملک ہاتھ پر گیند لگنے کے سبب ریٹائرڈ ہرٹ ہو گئے۔

دوسرے اینڈ پر موجود بابر اعظم نے سات چوکوں اور ایک چھکے سے مزین سنچری مکمل کی لیکن فوراً بعد جوش ہیزل وڈ کی وکٹ بن گئے۔

اس کے بعد عمر اکمل نے کیچ ڈراپ ہونے کے بعد 46 رنز بنا کر چند ہاتھ دکھائے لیکن ان کی یہ کوشش ٹیم کے کسی کام نہ آ سکی۔

پاکستان کی پوری ٹیم 50ویں اوور میں 312 رنز بنا کر ڈھیر ہو گئی اور آسٹریلیا نے 57 رنز سے فتح کے ساتھ ہی سیریز میں بھی 4-1 سے کامیابی حاصل کر لی۔

ڈیوڈ وارنر کو شاندار سنچری پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا جبکہ وہ سیریز کے بہترین کھلاڑی بھی قرار پائے۔

سیریز 4-1 سے جیتنے والی آسٹریلین ٹیم کا گروپ فوٹو— فوٹو: اے ایف پی
سیریز 4-1 سے جیتنے والی آسٹریلین ٹیم کا گروپ فوٹو— فوٹو: اے ایف پی

اس شکست کے ساتھ ہی پاکستان کے دورہ آسٹریلیا کا بھی اختتام ہو گیا جہاں اسے ٹیسٹ سیریز میں 3-0 سے شکست کا منہ دیکھنا پڑا تھا۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: