دہشت گردی کو کسی مذہب سے نہیں جوڑا جاسکتا۔ چوہدری نثار

اسلام آباد(سیدتوقیرزیدی) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہا ہے کہ دہشت گردی کو کسی مذہب سے نہیں جوڑا جاسکتا، اس لئے ہر داڑھی والے مرد اور باحجاب عورت کو ممکنہ دہشت گرد نہیں سمجھنا چاہیے، سکیورٹی ایک کثیر جہتی مسئلہ ہے، خطے میں سیاست اورسیکیورٹی کو ملانے کا رحجان ہے، سیاست کو سیکیورٹی کے ساتھ نہیں ملانا چاہیے، مغرب اور جنوبی ایشیا میں سیکیورٹی کا تناظر اور ضروریات مختلف ہوسکتے ہیں لیکن سیکیورٹی کا مطلب یہ نہیں کہ سرحدیں بند کرکے ملک محفوظ ہوجائیں، سرحدوں کو بند کرکے امن محسوس کرنے کا نام تحفظ نہیں ہے۔جمعرات کو اسلام آباد میں نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں سیمینارسے خطاب کے دوران وزیرداخلہ چودہری نثارنے کہا کہ امریکی صدر ٹرمپ کے حکم نامے نے مسلم دنیا میں منفی پیغام بھیجا، ہرداڑھی والے مرد اور ہرحجاب والی عورت کو ممکنہ دہشت گرد نہیں سمجھنا چاہیے۔وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ خطے میں سیاست اور امن و امان کو گڈ مڈ کرنے کا رجحان ہے حالانکہ امن و امان اور سیاست کو آپس میں ملا کر نہیں دیکھنا چاہیے۔ تحریک آزادی کا دہشت گردی سے موازنہ نہیں کرنا چاہیے، امن کی تڑپ دنیا کیلئے نہیں بلکہ یہ ہمارے اپنے مفاد میں ہے، امن و امان کے قیام کیلئے مذاکرات اہم ہیں، مذاکرات نہ کرنے والوں کا مقدمہ کمزور ہوتا ہے جب کہ مسائل کے حل کی بنیادی کنجی ایک دوسرے سے گفتگو ہی ہے، پاکستان خطے میں امن کیلئے زیادہ سے زیادہ لچک دکھا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ سکیورٹی ایک کثیر جہتی مسئلہ ہے، سیکیورٹی کا مطلب یہ نہیں کہ سرحدیں بند کرکے ملک محفوظ ہوجائیں،انہوں نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حکم نامے کے حوالے سے کہا کہ ان کے حکم نامے نے مسلم دنیا میں منفی پیغام بھیجا،سرحدوں کو بند کرکے امن محسوس کرنے کا نام تحفظ نہیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: