عدالتی فیصلے کو سیاست کی بھینٹ نہیں چڑھنا چاہیے۔۔چوہدری نثار علی خان

ٹیکسلا(توقیر خان سے) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے پاناما کیس کے فیصلے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ عدالتی فیصلے کو سیاست کی بھینٹ نہیں چڑھنا چاہیے۔

ٹیکسلا میں میڈیا سے گفتگو میں وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ عدالتی فیصلوں پر بھی عدالتیں لگ رہی ہیں، لیکن اگر اسے مثبت انداز سے دیکھا جائے تو یہ ایک متفقہ فیصلہ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘کہا جارہا ہے کہ 2 ججز ایک طرف اور 3 ایک طرف تھے، لیکن یہ درست نہیں، جہاں تک میں جانتا ہوں، 2 ججز نے اپنی رائے کا اظہار ضرور کیا ہے، لیکن جے آئی ٹی بنانے کے لیے تمام ججز کے دستخط موجود ہیں’۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ کوئی بھی عدالتی فیصلہ کسی کی خواہش کے مطابق نہیں، قانون اور آئین کے مطابق ہوتا ہے۔
؟

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین پر تنقید کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ ‘یہ قیامت کی نشانی ہے کہ آصف علی زرداری لوگوں کو ایمانداری اور دیانت پر لیکچر دیں’۔

یاد رہے کہ پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف علی زرداری نے گذشتہ روز کہا تھا کہ ‘وزیراعظم نواز شریف نے ہمارے ساتھ بددیانتی کی ہے، اس لیے وہ اب ان کا ساتھ نہیں دیں گے’۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ ‘غیب کا علم میرے پاس نہیں، لیکن میرے سامنے اگر اس حکومت میں کرپشن ہورہی ہوتی تو میں بہت پہلے ہی ان کو چھوڑ چکا ہوتا، لیکن میرا ضمیر مطمئن ہے’۔

چوہدری نثار نے کہا کہ ‘یہ کیس کرپشن کا نہیں، بلکہ اس بنیاد پر ہے کہ لندن فلیٹس کے پیسے کہاں سے آئے؟’ انھوں نے بتایا کہ ‘وزیراعظم اور ان کے وکلاء عدالت کو بتا چکے ہیں کہ ان کے والد کے پاس اثاثے موجود تھے، وہ پیسے ملک سے باہر لے کر نہیں گئے’۔

ڈان لیکس کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ ‘اگلے ہفتے پیر یا منگل کو مجھے باضابطہ طور پر اس کی رپورٹ مل جائے گی اور اسی دن میں یہ رپورٹ وزیراعظم نواز شریف کو پیش کردوں گا’۔

وزیر داخلہ نے یہ بیانات ایسے وقت میں دیئے ہیں جب گذشتہ روز سپریم کورٹ نے وزیراعظم نواز شریف کے خلاف پاناما کیس کی مزید تحقیقات کے لیے فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) کے اعلیٰ افسر کی سربراہی میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) بنانے کا حکم دیا، جسے حکمران جماعت مسلم لیگ (ن) کی جانب سے ‘فتح’ قرار دیا گیا۔

تاہم اپوزیشن جماعتوں بالخصوص پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی جانب سے وزیراعظم نواز شریف سے استعفیٰ کا مطالبہ کیا گیا۔#IMG_20170421_161000.jpg

کوہستان ہاوس میں پریس کانفرنس کرتے ہو ئے وزیر اعظم کی جانب سے پی او ایف کے ملازمین کے لیے اعلان کیے جانے والے پیکیج کے حوالے سے میرے سوال کے جواب میں وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ پی او ایف ملازمیں کے لیے وزیر اعظم کی جانب سے پیکج کا جو اعلان ہوا ہے وہ جلد ملازمین کو مل جائے گا۔ ابتدائی طور پر اعداد و شمار میں غلطیاں ہوئیں تھی جس کی وجہ سے دیر ہوئی میں بہت جلد پی او ایف کا دورہ کرو نگا اور عوام اور میڈیا کے دوست تسلی رکھیں اسی دور حکومت میں یہ وعدہ پورا ہوگا ۔ انشا اللہ ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: