میں برما کے مسلمانوں کی مدد کر نا چاہتا ہوں حکومت مجھے جہاز فراہم کرے ۔ پوری مسلم امہ کو اکٹھا ہونا پڑےگا۔ سینٹر محمد طلحہ

اسلام آباد(توقیر خان سے  ) میانمار میں مسلمانوں کے حوالے سے جو اس وقت سوشل میڈیا ،الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا کے ذریعے جو حالات دیکھ ر ہا ہوں دل خون کے آنسو روتا ہے ۔میانمار مسلمانوں پر ظلم ہو رہا ہے اس قتل وغارت گری اور ظلم کی میں پر زور مزمت کر تاہوں۔ ترکی سے سینیٹر محمد طلحہ محمود نے اپنے ایک پیغام میں کہا میں نے عید شام کے پناہ گزینوں کے کیمپوں میں گزاری ۔شامی مسلمانوں کی حالت زار ابتر ہے سوشل میڈیا کے ذریعے جب برما میں مسلمانوں پر ظلم دیکھا بہت دکھ ہوا۔ میں یہ سمجھتا ہوں کہ ہلاکوں خان کی یاد تازی کی جاری ہے ۔اس وقت مسلمانو ن کے خون سے دریاں سرخ ہو گئے تھے اور اس وقت بھی خون کی ندیا ں بہا دی گئی مسائل کہاں ہیں مسائل عراق میں ، یمن ، لیبیا، شام کشمیر ، افغانستان میں ہیں۔ یہ سب وہ علاقے ہیں جہاں مسلما ن بستے ہیں ۔ جس طرح مسلمانوں کوکاٹا جارہاہے اور کہاجاتا ہے کہ مسلمان دہشت گرد ہیں ۔ دہشت گرد وہ ہیں جنہوں نے لاکھوں انسانون کی جان لی۔ میانمار میں قتل وغارت کو روکنے میں یو این او کوئی کردار ادا نہیں کر رہا یو رپی یونین خاموش ہے ان سب کو کردار ادا کرنا چاہیے ہماری 34 ملکوں کی فوج کہا ں سوئی ہوئی ہے ۔اس وقت اگر بول رہا ہے جس ملک کا واضع پیغام ہے وہ ترکی ہے ترکی صدر طیب اردگان ہیں ۔ میں ترکی صدر طیب اردگان کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں پاکستان دنیا کی اس وقت واحدمسلم ایٹمی طاقت ہے اس کو میدان میں آنا چاہیے پوری مسلم دنیا کی نظریں پاکستان پر لگی ۔ کانفرنس بلائی جائے ٹیبل پر بیٹھ کر بات کی جائے ایک واضع پیغام پوری دنیا کو دیا جائے ۔ہمیں اپنا کردار ادا کرنا چاہیے ۔ میں نے اسلام آباد میں وزیر اعظم پاکستان ، وزیر خارجہ کو خط لکھاکہ میں ایک جہاز بھر کر میانمار کے مسلمانوں کو لیے لے جانا چاہتا ہوں ۔میر ی مدد کی جائے اگر برما کے ذریعے ممکن نہیں تو بنگلہ دیش کے راستے مجھے راستہ دیا جائے میری حکومت میری مدد کرے ۔مجھے ایک جہاز فراہم کیا جائے میں اپنے ساتھ پورے میڈیا کے دوستوں کو لے کر جاوں تاکہ وہاں کے اصل حقائق سامنے لائے جاسکے ۔ میں نے یورپین یونین ۔یو این او کو بھی خط لکھا ہے کہ کہ امن بحال کیا جائے۔ اگر میری حکومت میری مدد نہیں کرے گی تو میں ترکی سے مدد مانگوں گا کہ مجھے تعاون فراہم کیا جائے ۔ مجھے معلوم ہوا کہ ترکی کی ٹکہ اینڈ ترکش کزلئے کو اجازت مل گئی ہے۔اور ترکی کے وزیر خارجہ جلد میانمار کے مسلمانوں کی مدد کے لیے پہنچ رہے ہیں۔مجھے سے رابطے ہیں میں چاہتا کہ اگر پاکستان حکومت میری مدد کرے تو میں ترکی سے بھی تعاون کو پاکستان کے ذریعے میانمار مسلمانوں تک پہنچا سکتا ہوں ۔وقت کم ہے میں اپنے میانمار کے مسلمانوں کی مدد کر نا چاہتاہوں میں نے شام کے مسلمانوں کے ساتھ عید گزاری وہ بڑی مشکل میں ہیں میری درخواست ہے کہ مسلمانوں کی مشکل حل کرنے کے لیے آگے بڑھیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: